Skip to main content
Internet Archive's 25th Anniversary Logo

حملے،دھماکے، دعوت،5 گاڑیاں تباہ، 34 ہلاک و زخمی Date: 2020-02-17 حملے،دھماکے، دعوت،5 گاڑیاں تباہ، 34 ہلاک و زخمی کٹھ پتلی فوجوں اور مقامی جنگجوؤں کو امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے بدخشان، لغمان، جوزجان، غزنی، کنڑ، ننگرہار، بلخ اوربغلان صوبوں میں نشانہ بنایا۔ تفصیلات کے مطابق پیر کےروز صبح کے وقت صوبہ بدخشان ضلع جرم کے خراندآب کے علاقے میں یکےبعدیگر دھماکوں سے 2 فوجی رینجر گاڑیاں تباہ ہونے کے علاوہ 10 اہلکار ہلاک جب کہ 5 زخمی ہوئےاور اتوار کےروز ضلع نسئی کے مرکز میں مجاہدین کے حملے میں ایک فوجی رینجر گاڑی تبا ہونے کے علاوہ دشمن کو ہلاکتوں کا سامنا بھی ہوا، جب کہ کمیشن برائے دعوت و ارشاد کمیشن کے کارکنوں کی جدوجہد کے نتیجے میں ضلع تشکان کے مختلف علاقوں کے رہائشی 4 سیکورٹی اہلکاروں عبداللطیف ولدصوفی عبدل، عبدالرحمن ولد عبدالجبار، محمدزلمئے ولد غلام حسین اور نصیراحمد ولد قربان نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مخالفت سے دستبردار ہوئے۔ رپورٹ کے مطابق پیر کےروز صبح کے وقت صوبہ لغمان ضلع دولت شاہ کے نوڑہ کے علاقے شابگڑی کے علاقے میں بم دھماکے اور حملے کے دوران 2 فوجی ہلاک جب کہ ایک زخمی ہوا اور دوپہر کے وقت کنداکوڑی کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں مناف نامی پولیس اہلکار ہلاک ہوا۔ صوبہ جوزجان سے اطلاع ملی ہےکہ اتوار اور پیر کی درمیانی شب عشاء کے وقت ضلع آقچہ کے جبارشہید نامی چوکی پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس میں ایک جنگجو ہلاک جب کہ 5 زخمی ہوئے۔ دوسری جانب اتوار کےروز سہ پہرکے وقت صوبہ غزنی ضلع شلگر کے بنگی کے علاقے میں بم دھماکہ سے فوجی ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک ہوئے، جب کہ شام کے وقت صوبہ کنڑ ضلع اسمار کے شال کے علاقے میں سیکورٹی فورسز پر ہونے والے حملے میں 2 اہلکار زخمی اور دیگر فرار ہوئے۔ اسی طرح پیر کےروز دوپہر کے وقت صوبہ ننگرہار ضلع بٹی کوٹ کے ڈاگہ کے علاقے میں بم دھماک سے 2 جنگجو ، 3 زخمی اور ان کی گاڑی بھی تبا ہ ہوئی اور ضلع سرخ رود کے گزگ گاؤں کے رہائشی افغان فوجی سلمان ولد محب اللہ نے مجاہدین کی دعوت کو لبیک کہہ کر مخالفت سے دستبردار ہوا۔ دریں اثناء صوبہ بغلان ضلع مرکز ی بغلان کے جنگل باغ کے علاقے میں بم دھماکہ سے فوجی سپلائی گاڑی تباہ ہونے کے علاوہ ڈرائیور بھی ہلاک ہوا۔ نیز پیر کےروز سہ پہر کے وقت صوبہ بلخ ضلع خاص بلخ کے سہ جوئے کے علاقے میں فوجی کاروان پر سنائیپرگن حملے میں ایک فوجی مارا گیا، جب کہ صوبہ پکتیکا کے صدر مقام شرنہ شہر کے حنیف گاؤں کے رہائشی پولیس اہلکار رحمت اللہ ولد حاجی صدید نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مخالفت سے دستبردار ہوا۔ sharealfath-imarate-islamia

Item Preview

You must log in to view this content

SIMILAR ITEMS (based on metadata)